کبھی ٹکرا بھی جاتے ہیں جو برتن ساتھ رہتے ہیں
ہماری ہو بھی جاتی ہے کبھی تکرار آپس میں

VN:F [1.9.22_1171]
Rating: 0.0/5 (0 votes cast)